Wednesday, December 12, 2018
Home > قومی > مظفرآباد سے آیا مظلوم باپ پمز انتظامیہ کے خلاف سپریم کورٹ پہنچ گیا

مظفرآباد سے آیا مظلوم باپ پمز انتظامیہ کے خلاف سپریم کورٹ پہنچ گیا

مظفرآباد سے آیا مظلوم باپ پمز انتظامیہ کے خلاف سپریم کورٹ پہنچ گیا

نیوزڈیسک(آوازپوائنٹ): مظفرآباد سے آیا مظلوم باپ پمز انتظامیہ کے خلاف سپریم کورٹ پہنچ گیا۔

مظفرآباد سے آئے شہری کا کہنا ہے کہ ایک حادثے کے دوران میرے بیٹے فیضان کی ریڑ کی ہڈی ٹوٹ گئی تھی جس پر اسے مظفرآباد سے پمز منتقل کیا گیا ۔

متاثرہ والد کا کہنا ہے کہ پمز میں کچھ ڈاکٹروں نے کہا کہ تم واپس چلے جاوٗ یہاں علاج نہیں ہو سکتا ۔ فیضان کے والد کا کہنا ہے کہ راولپنڈی کے ایک ڈاکٹر نے مشہورہ دیا کہ بچے کا جلد سے جلد علاج کرائیں مرض قابل علاج ہے جس پر بچے کو دوبارہ پمز لے کر آیا لیکن ڈاکٹروں نے پھر منع کر دیا۔

مظلوم باپ کا کہنا ہے جب ہم نے بچےکو سی ایم ایچ راولپنڈی لے جانا چاہا تو پمز والوں نے زبر دستی روک لیا اور کہا کہ ڈاکٹر ساجد نذیر بھٹی آپ کے بیٹے کا علاج کریں گے۔  ڈاکٹرساجد نذیر بھٹی کی سرپرستی میں فیضان کو پمز میں داخل کروایا مگر ساجد نذیر بھٹی نے خود آپریشن کرنے کے بجائے اناڑی ڈاکٹروں سے بچے کا آپریشن کروایا جس پر بچے کی حالت انتہائی تشویش ناک ہوچکی ہے ۔

//www.facebook.com/awazpoint/

متاثرہ والد کا کہنا ہے بچے کے آپریشن اور علاج کے لئے پمز والوں کو لاکھوں روپے ادا کر چکا ہوں ، ادوایات اور انجیکشن بھی خود خرید کر لاتا ہوں مگر جنہوں نے آپریشن کیا وہ ملتے ہی نہیں ۔

فیضان کے والد نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مجھے انصاف دیا جائے اور جنہوں نے میرے بیٹے کو اس حالت تک پہنچایا ہے انھیں کٹہرے میں لایا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *